بابر اعظم کی ٹیسٹ میں کامیابی مثبت پہلورہا : اظہرعلی

کھیل
11
0
sample-ad

ایڈیلیڈ(اسپورٹس ڈیسک)آسٹریلیا کیخلاف دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں کلین سوئپ ناکامی کے بعد قومی کپتان اظہرعلی بے تکے جواز تراشنے لگے جنہوں نے بابر اعظم کی ٹیسٹ میں کامیابی کو دورے کا مثبت پہلو قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ سفید بال کرکٹ کے بعد انہوں نے طویل فارمیٹ میں بھی خود کو منوا لیا۔اظہرعلی کا کہنا تھا کہ بابر اعظم کو اس سیریز میں وہ بریک تھرو مل گیا جس کی وہ خواہش رکھتے تھے اور امید ہے کہ وہ اس عمدہ کھیل کا سلسلہ جاری رکھیں گے کیونکہ سخت کنڈیشنز میں مشکل بالنگ کیخلاف اچھی کارکردگی سے پلیئر کو زیادہ حوصلہ ملتا ہے جسے یقین ہوجاتا ہے کہ وہ ٹیسٹ کرکٹ میں کامیابی کے ساتھ قدم اٹھا سکتا ہے ۔انہوں نے طویل فارمیٹ میں بابر اعظم کی کامیابی کو پاکستانی ٹیم کیلئے مثبت پہلو قرار دیتے ہوئے واضح کیا کہ برسبین اور ایڈیلیڈ میں عمدہ بیٹنگ کے بعد توقع ہے کہ وہ آئندہ میچوں میں بھی بہترین کھیل پیش کریں گے ۔انہوں نے آسٹریلیا کیخلاف سیریز کو مایوس کن کہنے سے گریز نہ کرتے ہوئے تسلیم کیا کہ نوجوان ٹیم سے جو توقعات وابستہ کی گئی تھیں وہ ان پر پوری نہیں اتر سکی حالانکہ یہ بالنگ آپشنز کے لحاظ سے بہترین ممکنہ ٹیم تھی جس کا انتخاب کیا گیا لیکن آسٹریلیا میں کھیلتے ہوئے کچھ خاص قسم کے بالرز درکار ہوتے ہیں جو پاکستان کی ڈومیسٹک کرکٹ میں دستیاب نہیں ہیں کیونکہ کوکابرا بال سے موومنٹ کے ساتھ پیس کا عنصر بھی ابھارنا پڑتا ہے ۔اظہرعلی نے توقع ظاہر کی کہ آنے والے عرصے میں یہی پیسرز کنڈیشنز کا فائدہ اٹھا کر بہتر کارکردگی پیش کریں گے لیکن اس کیلئے تھوڑا سا صبر کرنا ہوگا۔انہوں نے اعتراف کیا کہ کھیل کے تینوں شعبوں میں انہیں ناکامی ہوئی لیکن تواتر کے ساتھ پاکستان کی اے اور انڈر 19 ٹیمیں آسٹریلیا بھیجی جائیں تو دونوں ٹیموں کے درمیان فرق میں کمی آئے گی کیونکہ پاکستان میں کنڈیشنز یکسر مختلف ہیں لہٰذا پاکستانی کھلاڑی آسٹریلین ماحول سے ہم آہنگ ہو کر ہی بہتری حاصل کرسکتے ہیں۔ اظہرعلی کا کہنا تھا کہ آسٹریلیا میں بیٹنگ کیلئے کنڈیشنز دنیا میں سب سے بہتر ہیں جہاں پیس اور باؤنس سے ہم آہنگ ہو کر پاکستانی بیٹسمین بھی کامیابی سے رنز اسکور کر سکتے ہیں لیکن ٹیسٹ میچز جیتنے کیلئے حریف کی 20 وکٹیں درکار ہوتی ہیں اور اب اسی پہلو پر کام کرنا ہے کہ یہ کیسے ممکن ہو سکتا ہے جبکہ حریف ٹیم پر ابتداء سے ہی حکمرانی کیلئے پہلی اننگز میں بڑا اسکور بھی لازمی ہے

sample-ad

Facebook Comments

POST A COMMENT.