برطانوی فوج کی بیرون ملک مداخلت سے انتہاپسندی بڑھی:لیبر پارٹی

دنیا
14
0
sample-ad

لندن:برطانیہ کی لیبر پارٹی کے لیڈر نے کہا ہے کہ برطانیہ کی غیر ملکی امور میں مداخلت اور عراق جنگ میں شامل ہونے کے بعد ملک میں انتہا پسندی کو مزید ہوا ملی۔لندن برج حملے سے متعلق بات کرتے ہوئے لیبر پارٹی کے لیڈر جیرمی کوربن نے برطانیہ کے وزیراعظم بورس جانسن کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا سب سے بڑا چاپلوس قرار دے دیا۔ان کا کہنا تھا یہی وقت ہے کہ اب برطانیہ کو امریکی صدر کی دُم سے علیحدہ ہوجانا چاہیے ۔ دہشت گردی کے خلاف نام نہاد جنگ واضح طور پر ناکام ہوچکی ہے اور دنیا اب عراق پر ہونے والے حملے کے نتائج بھگت رہی ہے ۔دوسری جانب شمالی افریقا، مشرق وسطیٰ اور جنوبی ایشیا میں برطانوی فوج کی مداخلت کی وجہ سے مسائل کم ہونے کے بجائے ان میں مزید اضافہ ہوا ہے ۔ جیرمی کوربن

sample-ad

Facebook Comments

POST A COMMENT.