پرتھ کی تیز وکٹ پر گرین شرٹس کی سخت آزمائش

کھیل
8
0
sample-ad

پرتھ(اسپورٹس ڈیسک)آسٹریلیا کیخلاف آج تیسرا ٹی ٹوئنٹی پرتھ کی تیز وکٹ پر گرین شرٹس کیلئے ایک اور آزمائش ہوگا،گزشتہ روز بھرپور ٹریننگ سیشن کے دوران پاکستانی کوچنگ اسٹاف نے کھلاڑیوں کا کھیل بہتر بنانے پر توجہ مرکوز رکھی،مصباح الحق نے بیٹسمینوں اور وقار یونس نے بالرز کو کامیابی کے گر سکھائے ،قومی پیسر وہاب ریاض نے اوپٹس اسٹیڈیم کی وکٹ کو فاسٹ بالرز کیلئے مددگار قرار دیتے ہوئے واضح کیا کہ پہلے میچ میں 15سے 20 رنز پیچھے رہے جبکہ دوسرے معرکے میں اسٹیون اسمتھ کو برخاست نہیں کرسکے جس کی وجہ سے کامیابی نہیں مل سکی۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان تین میچوں پر مشتمل ٹی ٹوئنٹی سیریز کا تیسرا اور آخری معرکہ آج پرتھ کے اوپٹس اسٹیڈیم میں ہوگاتو پاکستانی ٹیم کی اولین ترجیح یہی ہوگی کہ وہ کامیابی کی بدولت سیریز برابر کردے ۔گزشتہ روز پاکستانی ٹیم نے بھرپور ٹریننگ سیشن کیا جس کے دوران کوچنگ اسٹاف نے کھلاڑیوں کا کھیل بہتر بنانے پر توجہ مرکوز رکھی جبکہ نیٹ سیشن میں ہیڈ کوچ مصباح الحق بیٹسمینوں اور بالنگ کوچ وقار یونس بالرز کو کامیابی کے گر سکھاتے رہے ۔ہیڈ کوچ نے پاکستانی کھلاڑیوں کو طویل لیکچر کے دوران ذہنی طور پر بھی میچ کیلئے تیار کرتے ہوئے انہیں ہدایات اور مشورے دیئے ۔پاکستانی فاسٹ بالر وہاب ریاض نے میڈیا سے گفتگو کے دوران اس بات کا اعتراف کیا کہ اوپٹس اسٹیڈیم کی وکٹ فاسٹ بالرز کیلئے مدد گار ثابت ہو گی اور انہوں نے اس سخت چیلنج کا سامنا کرنے کی تیاری کرلی ہے لیکن کامیابی کیلئے بیٹنگ لائن کو بھی رنز اسکور کرنا ہوں گے ۔ٹی ٹوئنٹی سیریز کے ابتدائی دو میچوں سے متعلق بائیں ہاتھ کے پیسر کا کہنا تھا کہ سڈنی میں پہلے میچ کے دوران پاکستانی ٹیم پندرہ سے بیس رنز پیچھے رہی جہاں بارش کی وجہ سے میچ کا نتیجہ نہیں نکل سکا البتہ اوورز پورے ہوتے تو پاکستانی ٹیم 160رنز کر سکتی تھی تاہم کینبرا میں جب انہیں ابتداء سے ہی وکٹیں گرانے کی ضرورت تھی تو اسٹیون اسمتھ کو بروقت برطرف نہیں کیا جا سکا۔وہاب ریاض کا کہنا تھا کہ پاکستانی بالنگ اٹیک نے دوسرے میچ میں ڈیوڈ وارنر اور آرون فنچ کو جلد برخاست کردیا لیکن اسٹیون اسمتھ کو آؤٹ نہیں کیا جا سکا جو برطرف کردیئے جاتے تو میچ کا نتیجہ یکسر مختلف بھی ہو سکتا تھا۔قومی پیسر نے کپتان بابر اعظم کی ٹی ٹوئنٹی فارمیٹ میں قیادت اور بیٹنگ کو سراہتے ہوئے کہا کہ وہ ٹیم کو فرنٹ سے لیڈ کر رہے ہیں اور انہوں نے دونوں میچوں میں بہترین بیٹنگ کا مظاہرہ کیا ہے اور یہ ان کا مضبوط اعتماد ہی ہے جس کے سہارے وہ رنز بنانے میں کامیاب رہے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں وہاب ریاض نے سابق کپتان سرفراز احمد کی خدمات کو سراہتے ہوئے کہا کہ وہ بھی کافی اچھے کھلاڑی ہیں لیکن ان کی موجودہ فارم اچھی نہیں ہے ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ آسٹریلیا کی ابتدائی تین وکٹیں اہم ہیں جن کا جلد گرایا جانا کامیابی کی ضمانت ہوگا۔

sample-ad

Facebook Comments

POST A COMMENT.