افغانستان,یونیورسٹی میں دھماکا,طلباء و طالبات سمیت 23 زخمی

دنیا
3
0
sample-ad

کابل(نیوز ایجنسیاں)افغانستان کے صوبہ غزنی میں ایک یونیورسٹی میں زوردار دھماکا ہوا ،جس کے نتیجے میں کم از کم 23طالبعلم زخمی ہو گئے ،زخمیوں میں 18طالبات اور5طلبا شامل ہیں،کچھ زخمیوں کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے ، ہلاکتوں کا خدشہ ہے ۔افغان میڈیا کے مطابق غزنی یونیورسٹی میں دھماکا اس وقت ہوا جب لیکچر ہورہا تھا۔ تاہم دھماکے کی ذمہ داری ابھی تک کسی بھی گروپ کی جانب سے قبول نہیں کی گئی ۔ادھرافغان طالبان کے ترجمان نے کہا ہے کہ امریکا کے ساتھ معاملات پرامن انداز میں حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں اگر حل نہ ہوئے تو آخری دم تک لڑتے رہیں گے ۔ ٹویٹر سے جاری اپنے پیغام میں ان کا کہنا تھا کہ افغانستان ایک دلدل ہے جتنا حرکت کرو گے اتنا اس میں دھنستے جائوگے ، ہم لڑیں گے تاریخ خود کو دہرائے گی۔دریں اثنا مغربی صوبے فرح میں افغان سکیورٹی فورسز نے کامیابی سے ایک گاڑی کو نشانہ بنایاجس میں طالبان کے فوجی کمیشن کے سربراہ مولوی کامران سمیت3دیگر اہم کمانڈر مولوی صمد ، مولوی داؤد اور مولوی اخوندزادہ ہلاک ہو گئے ۔ افغان دارالحکومت کابل میں طالبان نے سی آئی ڈی آفیسر کو گولی مار کر موت کی نیند سلا دیا، افغان مشرقی صوبے ننگر ہار میں سکیورٹی فورسز نے آپریشن کے دوران داعش کے اہم ترین کمانڈر شیر داد کو گرفتار کر لیا ۔

sample-ad

Facebook Comments

POST A COMMENT.