دنیا

یمن:حوثی باغیوں پر30ہزار بچوں کو جنگ میں جھونکنے کاالزام

مانیٹرنگ کی ضرورت ہے ،یونیسیف بچوں کی بحالی کیلئے مدد فراہم کرے ،یمنی سفیر

صنعا(ایجنسیاں)یمن کی آئینی حکومت نے کہا ہے کہ ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کی طرف سے یمن کے 30 ہزار بچوں کو جنگ میں جھونکا گیا ہے جن کی زندگیاں خطرے میں پڑ چکی ہیں۔رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ میں یمن کے سفیر عبداللہ السعدی نے عالمی ادارہ اطفال ‘یونیسیف’ کی ایگزیکٹو کونسل کے اجلاس سے خطاب میں کہا کہ حوثی ملیشیا یمنی بچوں کے حقوق کی سنگین پامالیوں کی مرتکب ہو رہی ہے ۔ حوثیوں کی طرف سے جنگ کے لیے بھرتی کیے گئے سینکڑوں بچے اب تک جاں بحق ہوچکے ہیں جب کہ ہزاروں اس وقت بھی جبری بھرتی کی وجہ سے حوثی ملیشیا کی صفوں میں ہیں۔السعدی نے حوثی ملیشیا کے زیر تسلط علاقوں میں بچوں کے حقوق کی پامالیوں کا پتا چلانے کے لیے انکوائری کمیشن کے قیام اور مانیٹرنگ کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ ایام میں یمن میں بچوں کے حقوق کی پامالیوں کے حوالے سے جو بیانات اور تفصیلات سامنے آئی ہیں وہ حقائق کے مطابق نہیں۔

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close
%d bloggers like this: