پاکستان

کورونا کے نئے مریض, مزید پابندیاں،جلد قوم سے خطاب کرونگا: عمران خان

ایک مریضہ کی حالت تشویشناک ، تفتان سے زائرین سکھر اور ڈیرہ غازی خان منتقل،سندھ میں مزارات ، درگاہیں بند ، سرکاری افسروں کو سفر سے روکدیا گیا ، پنجاب میں پو لیس پریڈ ختم ، قیدیوں کو سزا میں 2ماہ کی معافی بسوں میں کھڑے ہو کر سفر کی ممانعت ، تمام جامعات کے ہوسٹلز خالی ، پبلک سروس کمیشن کے امتحانات ملتوی ،لاہور میں 36شادی ہال اور متعدد سینما گھر سیل ، پنجاب حکومت کا فوری وینٹی لیٹرز درآمد کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد(اے پی پی)وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کے خطرات سے آگاہ ہیں اور نمٹنے کے لیے مؤثر اقدامات کئے ہیں، قوم سے درخواست ہے کہ احتیاطی تدابیر اختیار کریں اور حکومت کی ہدایات پر عمل کریں ۔ ہمیں صرف احتیاط کی ضرورت ہے ، گھبراہٹ کی نہیں۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا عوام کی صحت و سلامتی کو یقینی بنانے کیلئے مناسب انتظامات کرچکے ہیں ۔ کورونا وائرس سے نمٹنے کے اقدامات کی ذاتی طور پر نگرانی کر رہا ہوں، عالمی ادارہ صحت نے پاکستان کے اقدامات کو سراہا اور انہیں دنیا میں بہترین قرار دیا ہے ۔ صورتحال پر جلد قوم سے خطاب کروں گا۔ (نیوز رپورٹر،سٹی رپورٹر ،اپنے نامہ نگارسے ،نامہ نگار،خبر نگار ،اپنے رپورٹر سے ،سپیشل رپورٹر،خصوصی نیوز رپورٹر،نیوز ایجنسیاں، دنیا مانیٹرنگ )ملک میں کورونا وائرس کے مزید 5کیسز کی تصدیق ہونے کے بعد مریضوں کی مجموعی تعداد33 ہو گئی جبکہ نئی پابندیاں لگادی گئیں ، تفریحی مقامات اور سندھ میں مزارات و درگاہیں بند ہوچکی ہیں ۔ اسلام آباد میں ایک اور کراچی،بلوچستان میں 2 ،2کیسز سامنے آئے ،محکمہ صحت سندھ کےمطابق ایک متاثرہ مریض کچھ دن قبل سعودی عرب سے کراچی پہنچا تھا اور علامات ظاہر ہونے پر ٹیسٹ کیا گیا جو مثبت آیا ہے ۔ کراچی میں دوسرا کیس 20 سالہ نوجوان میں سامنے آیا ہے جس کی کوئی ٹریول ہسٹری نہیں ہے ۔ متاثرہ نوجوان کے والد حال ہی میں برطانیہ سے واپس آئے تھے ، والدین کے بھی نمونے حاصل کر لئے گئے ہیں۔محکمہ صحت کے مطابق اس نئے کیس کے بعد سندھ میں متاثرہ افراد کی تعداد 17 ہوگئی ہے جن میں سے دو صحت یاب ہوچکے ہیں جبکہ 15 زیر علاج ہیں۔پمز میں زیر علاج گلگت کی 48 سالہ خاتون مریضہ بھی صحت یاب ہو گئی جسے 3 روز بعد ڈسچارج کردیا جائے گا۔ بلوچستان کے وزیر آبپاشی نوابزادہ طارق مگسی نے کہا ہے کہ بلوچستان میں کورونا وائرس کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 10ہوگئی ہے جن میں سے 2 نئے مریض ہیں ۔ پمز ہسپتال کے ترجمان کے مطابق امریکا سے چند دن قبل آنے والی 40 سالہ خاتون کو پمز ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے جس کی حالت تشویشناک ہے ۔پمز میں 6 افراد کو کورونا وائرس کے شبہ میں داخل کرلیاگیاہے جن میں سے تین مریضوں میں وائرس کی تشخیص ہوئی ہے ۔ مشتبہ مریضوں میں سکندر حیات ، فرانس سے آنے والی حلیمہ دستگیر ، تاج بی بی ، سید ممتا زحسین اور اسلام آباد ایئرپورٹ پر ڈیوٹی دینے والا ایف آئی ا ے اہلکار حسن نثار شامل ہیں۔ دریں اثنا کورونا وائرس سے متعلق قومی سلامتی کمیٹی کی طرف سے تشکیل کردہ قومی رابطہ کمیٹی کا پہلا اجلاس ڈاکٹر ظفر مرزا کی زیر صدارت ہوا۔ویڈیو لنک پر تمام وزرائے اعلیٰ اور ڈی جی آئی ایس پی آر نے شرکت کی۔ اجلاس میں معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان، وزیراعظم کے مشیر معید یوسف، سیکرٹریز صحت، خزانہ اور اطلاعات نے شرکت کی جبکہ چیئرمین این ڈی ایم اے اور سرجن جنرل نے بھی خصوصی طور پر شرکت کی۔اجلاس کے دوران قومی سلامتی کمیٹی کے فیصلوں پر عملدرآمد کا جائزہ لیا گیا ۔ ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا تھا کہ عوام کو تحفظ دینے کے لئے ملکر موثر اقدامات کو یقینی بنانے کے لئے ہر ممکن وسائل بروئے کار لارہے ہیں، وفاق صوبے اور تمام متعلقہ ادارے کسی بھی صورتحال سے نمٹنے کیلئے تیار ہیں۔ عوام کو خوفزدہ ہونے کی ضرورت نہیں ، احتیاطی تدابیر اور ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا چاہئے ۔ گلگت بلتستان میں قومی ادارہ صحت کے تعاون سے تشخیص کی سہولت فراہم کی جارہی ہے ۔ پورے ملک کے ہسپتالوں میں کوروناوائرس سے بچائو کیلئے علیحدہ کمرے مختص کردئیے ہیں ۔ تعلیمی ایمرجنسی کے بعد پلان بی کی تیاری شروع کر دی گئی ہے جبکہ حکومت نے سرکاری اداروں میں بھی نگرانی سخت کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ سرکاری اداروں، وزارتوں میں سکریننگ شروع کی جائے گی، دفاتر، اداروں، محکموں کو ڈیجیٹل تھرما میٹر دیئے جائیں گے ۔عوامی رابطے سے متعلق دفاتر میں ماسک اور دستانے لازمی قرار دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ اجلاس کے دوران وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے فنڈز کا خود انتظام کررہے ہیں۔ کچھ آلات کی ضرورت ہے جووفاق مہیا کرے ۔ وزیراعلیٰ بلوچستان سے درخواست ہے کہ جولوگ بسوں میں چڑھیں انہیں راستے میں اترنے نہ دیا جائے ، ہم سکھرپہنچنے پر بسوں کو بھی ڈس انفیکٹڈ کریں گے ۔کمیٹی نے کورونا وائرس کی روک تھام اور مریضوں کے علاج کیلئے فوری طورپر دو ارب روپے بجٹ لینے کافیصلہ کیاہے اور کورونا وائرس کے پھیلائو کی صورت میں 100 ارب تک کاتخمینہ لگایا گیا ہے ، نیشنل کو آڈینیشن کمیٹی سوموار (16مارچ ) کو بجٹ فراہمی سمیت اپنی سفارشات وزیراعظم کومنظوری کیلئے بھجوا ئے گی۔ بلوچستان کے علاقے تفتان میں رکھے گئے 289 زائرین کو سکھر منتقل کردیا گیا ہے جبکہ متعدد زائرین کو ڈیرہ غازی خان میں منتقل کیا گیا ہے ۔ایران سے آنے والے زائرین کو تفتان بارڈر سے لے کر دوبسیں سکھر کی لیبر کالونی پہنچیں جن میں مرد، خواتین اور بچے سوار تھے ۔ انتظامیہ نے زائرین کو لیبر کالونی میں قائم آئسولیشن یونٹ منتقل کیا ہے جہاں انہیں 14 روز کے لئے قرنطینہ میں رکھا جائے گا اور سکریننگ بھی کی جائے گی۔وزیراعلیٰ سندھ نے اپنا ہیلی کاپٹر سکھر روانہ کیا تاکہ تفتان سے آئے ہوئے زائرین کے نمونے ہیلی کاپٹر کے ذریعے لائے جا سکیں۔وسندے والی سے نامہ نگار کے مطابق شہر سلطان کا رہا ئشی نوجوان سہیل کراچی میں چینی باشندوں کیساتھ کام کرتا تھا جسے کورونا کی علامات پر مقامی آر ایچ سی لے جایا گیا تاہم وہ وہاں سے فرار ہوگیا۔وزیر اعلیٰ سندھ کی زیرصدارت ٹاسک فورس کا بھی اجلاس ہوا جس میں ہر ضلع میں کورونا وائرس کے مریضوں کیلئے قرنطینہ سینٹر بنانے اور کوئٹہ سے سکھر آنیوالے زائرین کے فوری ٹیسٹ کرانے کی ہدایت کی گئی ۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہاکہ پورے سندھ میں ہر طرح کے سماجی ، سیاسی اور مذہبی اجتماعات پر پابندی عائد کررہے ہیں، صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کو ہدایت کی کہ وہ تعلقہ سطح پر خاندانوں کا ڈیٹا لینا شروع کریں تاکہ کسی بھی ہنگامی صورتحال میں لوگوں کو ان کی خوراک ، ادویات اور دیگر متعلقہ سامان اور مدد مہیا کیا جاسکے ۔سندھ حکومت نے درگارہ عبداللہ شاہ غازی، درگاہ حضرت لعل شہباز قلندر اور درگاہ شاہ عبدالطیف بھٹائی سمیت سندھ بھر کے مزارات کو تین ہفتوں کیلئے بند کردیا ہے ۔چیف ایڈ منسٹریٹر اوقاف سندھ منور مہیسر نے بتایا کہ حیدرآباد اور کراچی سمیت سندھ بھر کے تمام مزارات اور درگاہوں کو زائرین کے لئے بند کردیا گیا ہے ۔ سندھ میں مجموعی طور پر 78 مزارات ہیں ، محکمہ اوقاف کے ملازمین دھمال، شاہ عبدالطیف بھٹائی کی وائی اور راگ کو جاری رکھیں گے ۔وزیراعلیٰ سندھ نے سرکاری افسروں پر سفری پابندی بھی عائد کردی ہے ۔ حکم دیا گیا ہے کہ اگر کوئی اجلاس ہو تو افسر ویڈیو کانفرنس کے ذریعے اجلاس کریں۔ حکومت سندھ نے ایڈوائزری جاری کرتے ہوئے اپنے ملازمین پر زور دیا ہے کہ وہ کام کے مقامات پر مصافحہ سے گریز کریں۔ انٹرا سٹی بسوں میں سگریٹ نوشی اور کھڑے ہوکر سفر کرنے پر پابندی لگادی گئی ۔ ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ کراچی میں 120بستروں اور 16وینٹی لیٹرز پر مشتمل ہسپتال کو کورونا کے مریضوں کیلئے مختص کردیا ہے ۔آئی جی جیل خانہ جات سندھ نصرت منگن نے صوبے بھر کی جیلوں میں کورونا وائرس سے بچاؤ کا سپرے کرانے کا حکم دیا ہے ۔دوسری جانب کورونا وائرس سے بچاؤ کے حوالے سے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے قیدیوں کیلئے دو ماہ کی معافی کا اعلان کردیا ہے ۔ جس سے سینکڑوں قیدیوں کی رہائی ممکن ہوسکے گی۔ دوماہ کی سزاکی معافی میں دہشت گردی، غداری ، کاروکاری کیسز کے ملزمان شامل نہیں ہے ۔ پنجاب میں پولیس پریڈ منسوخ کردی گئی ۔ سندھ پولیس کے ٹریننگ سکولز میں بھی تمام سرگرمیاں معطل کردی گئیں۔میئر کراچی وسیم اختر نے کے ایم سی کے زیر انتظام تمام تفریح گاہیں بند کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ قادر آباد کول پاور پلانٹ ساہیوال پر کام کر نے والے چینی ور کروں اور انجینئروں کے پلانٹ سے باہر جانے پر پابندی لگا دی گئی ہے ۔ ڈیلی ویجز ملازمین پر بھی پابندی لگادی ، جس سے 200 سے زائد ڈیلی ویجز ملازمین بے روزگار ہو گئے ہیں۔ لاہور میں انتظامیہ نے حکومتی احکامات کی خلاف ورزی کرنیوالے شادی ہالز اور سینما گھروں کو سیل کردیا۔ مالز ، بیدیاں روڈ، ماڈل ٹائون و دیگر علاقوں میں کارروائیاں کرتے ہوئے مجموعی طور پر 36 شادی ہالوں اور متعدد سینما گھروں کو سیل کیا گیا۔ پنجاب کے مختلف محکموں نے قومی سلامی کمیٹی کے فیصلوں پر عملدرآمد کے حوالے سے امتحانات، تعلیمی اداروں کی بندش، تفریحی مقامات، فیسٹیولز و دیگر پروگرامز کی منسوخی کے نوٹیفکیشن جاری کردئیے ۔ پنجاب یونیورسٹی سمیت تمام جامعات کے ہوسٹلز کو خالی کرالیا گیا ہے ۔ پنجاب یونیورسٹی کی انتظامیہ نے ہوسٹلوں میں مقیم طلبا اور طالبات کوریلوے سٹیشن اور لاری اڈا پر پہنچانے کے لئے یونیورسٹی کی 30 بسیں اور کوچیں بھی فراہم کی ہیں۔اسی طرح پاکستان سپورٹس بورڈ نے کورونا وائرس کے باعث پاکستان سپورٹس کمپلیکس اور کوچز سنٹرز میں تمام سہولیات 15 اپریل تک بند کردی ہیں۔پبلک سروس کمیشن کے زیر اہتمام مختلف سیٹوں پر لاہور ، بلوچستان میں ہونیوالے امتحانات منسوخ کردئیے گئے جبکہ تحریک انصاف کے سینئر مرکزی رہنما و سابق وفاقی وزیر ہمایوں اختر خان نے کہا ہے کہ حکومت کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورتحال سے ہرگز غافل نہیں بلکہ اس کے پھیلاؤ کی روک تھام کیلئے تمام ممکنہ اقدامات اور وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں۔ حکومت نے ایمر جنسی کے تحت بڑی تعداد میں وینٹی لیٹرزدرآمدکرنے کافیصلہ کیاہے تاکہ جہاں بھی ضرورت ہو ان کی دستیابی کو یقینی بنایا جائے ۔ ادھر بھارتی حکومت کی طرف سے غیرملکی شہریوں کو جاری ویزے منسوخ کئے جانے کے بعد واہگہ اٹاری بارڈرکے راستے مسافروں کی آمدورفت بند ہوگئی ہے ۔اس سے قبل بھارتی حکومت کی طرف سے واہگہ اٹاری بارڈرپر ہر روزہونے والی پرچم اتارے جانے کی تقریب میں بھی شہریوں کی شرکت پرپابندی لگائی جاچکی ہے اوراب پریڈکے وقت بھارتی سٹیڈیم خالی ہوتاہے ۔ کرتارپور راہداری پر پاکستانی امیگریشن سینٹرمیں میڈیکل عملہ تعینات کردیا گیا۔ یورپی یونین کے ہیڈ کوارٹر اور بیلجیم کے دارالحکومت برسلز کے پاکستانی سفارت خانے میں 23 مارچ پر ہونے والی پرچم کشائی کی تقریب منسوخ کردی گئی۔ سوات میں مالم جبہ فیسٹول منسوخ کردیاگیا ۔ آزاد کشمیر کی حکومت نے بھی کورونا وائرس کی صورتِ حال کے پیشِ نظر ہیلتھ ایمرجنسی نافذ کرنے کا اعلان کر دیا اور امتحانات ملتوی کرتے ہوئے تعلیمی ادارے 5 اپریل تک بند کردئیے ۔ بلوچستان سول سیکرٹریٹ کے انتظامی محکمے اوردیگر ادارے 22مارچ تک بند کردیئے گئے ۔ علاوہ ازیں سرحدیں بند کرنے کے فیصلے پر عملدرآمد سے طورخم بارڈر سے افغانستان جانے والا کارگو سرحد پار کرنے سے روک دیا گیا ۔ادھر وائرس کے خدشات کے باعث اڈیالہ جیل سے حوالاتیوں کی کچہری میں پیشی کو بھی روکنے کاحکم دیدیا گیا ہے ،صورتحال بہتر ہونے تک قیدیوں کی جیل سے ویڈیو لنک کے ذریعے حاضری لگائی جائے گی اور بیان وغیرہ ریکارڈ کئے جائیں گے ،انتظامیہ نے اسلام آباد میں کورونا الرٹ جاری کر دیا،تین ہفتے تک امتحانات منسوخ کر دیئے گئے ، نوٹیفکیشن کے مطابق تمام تعلیمی ادارے ، میڈیکل کالجز، ٹیکنیکل اور ووکیشنل سینٹرز تین ہفتے کے لئے بند رکھے جائیں گے ، نجی اور سرکاری ڈے کیئر سینٹرز،اکیڈمیز اور ٹیوشن سینٹرز بھی بند کرنے کی ہدایت کی گئی ہے ،اسلام آباد میں بڑے پبلک پارکس اور چڑیا گھر کو بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ،پارکس میں لیک ویو پارک اور جاپان پارک شامل ہیں، ادھر اسلام آبادہائیکورٹ نے ملازمین کو بائیو میٹرک حاضری سے روک دیا جبکہ چیف جسٹس اطہرمن اللہ کی ہدایت پر کرائسس منیجمنٹ کمیٹی تشکیل دے دی گئی ، احکامات کے مطابق کمیٹی میں جسٹس محسن اخترکیانی،جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب، ڈسٹرکٹ اینڈسیشن جج طاہرمحمود، ڈسٹرکٹ اینڈسیشن جج رخشندہ شاہین،ایڈمنسٹریشن جج سپیشل کورٹس راجہ جواد عباس حسن، سیکرٹری وزارت صحت کی طرف سے مقرر کردہ نمائندہ، ڈپٹی کمشنر اسلام آباد، وائس چیئرمین اسلام آباد بارکونسل،صدور اسلام آبادہائیکورٹ و ڈسٹرکٹ بارایسوسی ایشن اور رجسٹرار اسلام آبادہائیکورٹ شامل ہیں،اسلام آبادہائیکورٹ بار نے کورونا وائرس سے بچاؤ کیلئے دو روزہ ہڑتال کا اعلان کردیا،وزیر ریلوے شیخ رشید احمد کی ہدایت پر ریلوے کے تمام ہسپتالوں اور ڈویژنوں میں کورونا وائرس کے حوالے سے ایمرجنسی نافذ کردی گئی،فیڈرل بورڈ نے آزاد کشمیر سمیت ملک بھر میں جاری میٹرک کے سالانہ امتحانات منسوخ کر دئیے ، راولپنڈی بورڈ نے امتحان نہم سالانہ 2020ء کے بقایا پرچے آج سے تاحکم ثانی ملتوی کر دئیے ہیں،راولپنڈی میں تعلیمی اداروں کی بند ش کے احکامات پر عمل نہ کرنے والے 8تعلیمی ادارے (سیل) جبکہ4اداروں کو شوکاز نوٹس جاری دیئے گئے

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close
%d bloggers like this: