Home / پاکستان / فیصلہ کن مراحل میں سب ساتھ ہونگے : فضل الرحمن , مل کر آگے بڑھے گے : احسن اقبال

فیصلہ کن مراحل میں سب ساتھ ہونگے : فضل الرحمن , مل کر آگے بڑھے گے : احسن اقبال

اسلام آباد(اپنے رپورٹرسے ،نیوز ایجنسیاں ، مانیٹرنگ ڈیسک)مسلم لیگ (ن) نے باضابطہ طور پر جمعیت علما اسلام (ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمن سے درخواست کی ہے کہ آزادی مارچ نومبر تک موخر کردیں جبکہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ آج مجلس عاملہ کا اجلاس طلب کیا ہے مارچ اور دھرنا اکتوبر میں ہی ہوگا یا نومبر میں اس کا فیصلہ مجلس عاملہ کریگی، اتحادی جماعتوں کی سفارشات مجلس عاملہ کے سامنے رکھی جائیں گی۔ جمعیت علما اسلام (ف) کے قائد مولانا فضل الرحمن سے مسلم لیگ (ن) کے وفد نے ان کی رہائشگاہ پر ملاقات کی۔ وفد کی سربراہی احسن اقبال کر رہے تھے ۔ ملاقات میں مولانا عبدالغفور حیدری، امیر مقام، لیفٹیننٹ جنرل (ر)عبدالقادر اور دیگر بھی موجود تھے ۔ ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہا تمام سیاسی جماعتیں مشاورت کر رہی ہیں کہ ہم مشترکہ طورپر آگے بڑھیں ، فیصلہ کن مرحلے میں سب ساتھ ہو نگے ، پاکستان اورمذہب کوجدا نہیں کیا جاسکتا،حکومت نے ہمارے خلاف مذہبی کارڈ استعمال کیا پہلے دھرنا جائز تھا لیکن ہمارا دھرنا جائز ہے ۔ مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما احسن اقبال نے کہا ایک سال اور یہ حکومت چلی تو قومی سلامتی کو خطرات لاحق ہوجائیں گے ،ہم ملکر آگے بڑھیں گے اس سے فائدہ ہو گا،جو فیصلہ ہمارے قائد نواز شریف کا ہو گا وہ آخری فیصلہ ہوگا، آئین کی حفاظت، موجودہ حکومت کی رخصتی اور جلد شفاف انتخابات پر تمام اپوزیشن متفق ہے ۔ احسن اقبال نے کہا حکومت خوفزدہ ہے ، نواز شریف، مریم نواز، حمزہ شہباز، رانا ثنا سے مفتاح اسماعیل تک جیل میں ہیں، ہماری ڈیل صرف پاکستان کے عوام اور آئین کے ساتھ ہے ،مولانا فضل الرحمن کے سامنے سی ای سی اجلاس کی تجاویز رکھی ہیں ۔ انہوں نے کہاعمران خان کو ملک چلانے سے کوئی غرض نہیں، ا نہیں صرف مخالفین کو جیل میں ڈالنا اور اپوزیشن پر نیب کا شکنجہ کسنا ہے ، بے شک ہم سب کو جیلوں میں ڈال دیں، ان سے کوئی این آر او نہیں مانگ رہا، نہ یہ دے سکتے ہیں، این آر او کی تسبیح مسائل کا حل نہیں ۔احسن اقبا ل نے کہا جب وزیر اعظم سے سوال کیا جائے کہ کشمیر پر بھارت نے یہ قدم کیوں اٹھایا تو کہتے ہیں این آر او نہیں دوں گا، اقوام متحدہ میں 16ووٹ کیوں حاصل نہ کر سکے تو کہتے ہیں این آر او نہیں دوں گا۔انہوں نے کہا ہم چاہتے ہیں مولانا فضل الرحمن آزادی مارچ کی تاریخ آگے کریں اگر ہم مشترکہ حکمت عملی کیساتھ چلیں گے تو نتائج اچھے آئینگے ۔فضل الرحمن نے کہا نیاپاکستان اس وقت داخلی طور پر ڈوب رہا ہے ، معیشت ڈوب رہی ہے ،مہنگائی کی وجہ سے عام آدمی اپنے صبح و شام کیلئے پریشان، نوجوان مایوس ، تاجر کاروبار چھوڑ رہا اور پیسہ ملک سے باہر جارہا ہے ،ہر شعبہ زندگی سے وابستہ لوگ کرب میں مبتلا ہیں ۔ صباح نیوز کے مطابق احسن اقبال نے کہا حکومت گرانے کیلئے اسمبلیوں سے استعفے سمیت ہر جمہوری آپشن استعمال کریں گے ۔(ن)لیگی وفد نے چمن میں دہشت گردی کا شکار ہونیوالے پارٹی رہنما مولانا حنیف کے جاں بحق ہونے پر تعزیت کی۔ملاقات کے دوران لیگی رہنماؤں نے مولانا فضل الرحمن کو شہباز شریف کی بلاول بھٹو زرداری سے ملاقات سے آگاہ کیا۔علاوہ ازیں جے یو آئی (ف)نے سابق وزیر اعظم نواز شریف سے جیل میں ملاقات کرنے کا فیصلہ کرلیا۔ جے یو آئی ( ف )کے اعلامیہ کے مطابق ایک وفدمولانا فضل الرحمن کا پیغام نواز شریف تک پہنچائے گا،اجازت ملنے پر وفدجیل میں نواز شریف سے ملاقات کریگا،سیکرٹری داخلہ پنجاب کو نوازشریف سے ملاقات کیلئے جلد خط لکھا جائیگا۔

About admin

Check Also

پولیس میں خالی اسامیوں پر بھرتی کی اجازت دیدی:بزدار

ایگزیکٹو الاؤنس دینے کا جائزہ لیں گے ، گفتگو، شہید کی نماز جنازہ میں شرکت …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: