7

نیب کا تعلق کسی سیاسی پارٹی سے نہیں، جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال

لاہور: چیئرمین نیب جسٹس(ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ نیب کا تعلق کسی سیاسی پارٹی سے نہیں نیب کی وابستگی صرف اور صرف ریاست پاکستان سے ہے۔
چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے نیب لاہور بیورو کا دورہ کیا۔ ڈی جی نیب لاہور شہزاد سلیم نے انھیں میگا کرپشن مقدمات میں اب تک کی پیش رفت پر تفصیلی بریفنگ دی۔

چیئرمین نیب نے لاہور کے تفتیشی افسران اور پراسیکیوٹرز سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نیب آئین اور قانون کے مطابق فرائض سرانجام دے رہا ہے۔ نیب تفتیشی افسران بدعنوان عناصر کیخلاف قانون کے مطابق اور ٹھوس شواہد کی بنیاد پر تحقیقات کو منطقی انجام تک پہنچائیں۔

جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے کہا کہ نیب کا تعلق کسی سیاسی پارٹی سے نہیں، نیب کی وابستگی صرف اور صرف ریاست پاکستان سے ہے۔ نیب کا مقصد بدعنوان عناصر سے لوٹی گئی دولت کی برآمدگی اور اسے قومی خزانے میں جمع کروانا جبکہ بدعنوان عناصر کو انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کرنا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ نیب ہر شخص کی عزت نفس کا خیال رکھنے پر یقین رکھتا ہے۔ نیب حوالات میں ملزمان کو جیل مینول سے زائد سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں۔

چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ نیب کسی قسم کے تشدد پر یقین نہیں رکھتا۔ وائٹ کالر کرائمز میں تحقیقات قانون کے مطابق ٹھوس شواہد پر مبنی ہوتی ہیں جن کے لیے نیب کے تفتیشی افسران کو باقاعدہ کورسز کروائے جاتے ہیں۔

انہوں نے واضح کیا کہ جہاں قانون کے مطابق کیس بنتا ہو گا وہاں کسی خوف اور دباؤ کی پرواہ کیے بغیر میرٹ پر کیس بنائینگے اور جہاں کیس نہیں بنتا اسے قانون کے مطابق بند کر دینگے۔

چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ ہر ریجن میں علیحدہ طور پر شکایت سیل قائم کر دیئے گئے ہیں جہاں پر شکایت کنندگان کی شکایات 2 سے 3 بجے کے دوران روزانہ کی بنیاد پر متعلقہ ڈائریکٹر اور ان کا سٹاف سنے گا۔

جسٹس جاوید اقبال نے کہا کہ نیب نے ملکی تاریخ کے سب سے بڑے جعلی اکاؤنٹس کیس کی تحقیقات کا قانون کے مطابق آغاز کر دیا ہے۔ جعلی اکاؤنٹس کیس کی نیب کو منتقلی معزز سپریم کورٹ آف پاکستان کے نیب پر اعتماد کی عکاسی کرتا ہے۔ جسٹس (ر) جاوید اقبال نے ڈی جی نیب لاہور شہزاد سلیم کی سربراہی میں نیب لاہور کی کارکردگی کو بھرپور سراہا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں