6

گلبدین حکمت یار کا افغان صدارتی الیکشن لڑنے کا اعلان

کابل(آن لائن)موجودہ حکومت طالبان کیساتھ جنگ ختم کرنے میں ناکام ہوگئی،سربراہ حزب اسلامی ملک کو عوام کی منتخب کردہ طاقتور مرکزی حکومت کی ضرورت ہے ، پریس کانفرنس
حزب اسلامی کے سربراہ گلبدین حکمت یار نے رواں برس جولائی میں ہونے والے افغان صدارتی انتخابات میں حصہ لینے کا اعلان کردیا۔کابل میں نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ موجودہ حالات میں ملک کو عوام کی اکثریت سے منتخب کردہ صدر کی قیادت میں ایک طاقتور مرکزی حکومت کی ضرورت ہے۔ موجودہ حکومت طالبان کے ساتھ جنگ ختم کرنے میں ناکام ہوگئی۔انہوں نے قیام امن میں کردا ر ادا کرنے کا بھی عندیہ دیا۔ افغانستان میں صدارتی انتخابات کی تیاریاں زور و شور سے جاری ہیں جس میں اکثر سابق افسران اور سیاستدان بھی اشرف غنی کے مد مقابل ہیں۔افغان صدر کی جانب سے دوسری صدارتی مدت کیلئے بطور انتخابی امیدواررجسٹریشن کروائے جانے کا امکان ہے ۔سیاسی ذرائع کے مطابق گزشتہ روز افغانستان کے وزیر داخلہ امراللہ صالح بھی نائب صدر کا انتخاب لڑنے کیلئے عہدے سے مستعفی ہوگئے تھے۔ واضح رہے کہ افغانستان میں 20 اکتوبر 2018 کو پارلیمانی انتخابات ہوئے تھے جن کے دوران ملک بھر میں بم دھماکے اور حملوں کے نتیجے میں درجنوں افراد ہلاک اور زخمی ہوگئے تھے ۔رواں برس جولائی میں ہونے والے صدارتی انتخابات میں ملک کے بڑے حصوں میں سکیورٹی چیلنجز کا بھی سامنا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں