15

حکومت کے پیسوں سے کھیل نہیں چل سکتے : احسان مانی

راولپنڈی(سپورٹس رپورٹر)کھیلوں کی ترقی کیلئے سپورٹس کلچر کو بحال کرنا ہو گا ،پاکستان کرکٹ بورڈکی طرح دیگر سپورٹس اداروں کو بھی اپنی آمدنی پیدا کرنا ہو گی ہر ملک سے پاکستان میں سیریز کھیلنے کی بات کر رہے ہیں، جنوبی افریقہ کیخلاف سیریز جاری ، کپتان پربات کرنا مناسب نہیں:گفتگو
پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی نے کہا ہے کہ ملک میں سپورٹس کلچرل پروان چڑھانا ضروری ہے ، کسی ملک میں حکومت کے پیسوں سے کھیل نہیں چل سکتے ، پی سی بی کی طرح دیگر سپورٹس اداروں کو بھی اپنی آمدنی پیدا کرنا ہو گی، ملک میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کیلئے ہم ہر ملک کے کرکٹ بورڈ سے پاکستان میں سیریز کھیلنے کیلئے بات کر رہے ہیں، ایک بار جو کھلاڑی پاکستان آئے گا وہ دوبارہ بھی ضرور آئے گا، جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز ابھی جاری ہے ا س لئے کپتان سے متعلق بات کرنا مناسب نہیں، دورہ جنوبی افریقہ ختم ہونے کے بعد مجموعی طور پر ٹیم کی کارکردگی کا جائزہ لیں گے ۔ چوتھے آسٹریلین ہائی کمیشن اینڈ پی سی بی گرلز کرکٹ کپ کے انعقاد کے موقع پر گفتگوکرتے ہوئے احسان مانی نے کہا کہ پاکستان میں بچیوں کا کھیلنا بہت ضروری ہے ، ہم کھیلنے والی بچیوں کو سراہتے ہیں، ملک میں کھیلوں کی ترقی کیلئے سپورٹس کلچر کو بحال کرنا ہو گا۔ انہوں نے پی ایس ایل کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ رواں سال پی ایس ایل کے آٹھ میچز پاکستان میں ہوں گے ، پی ایس ایل ابتدائی تین سالوں میں کامیاب رہا اور ہم اسے مزید کامیاب بنانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کریں گے ۔ چیئرمین پی سی بی نے ٹیم کے دورہ جنوبی افریقہ میں ٹیسٹ سیریز میں ناقص کارکردگی پر مایوسی کا اظہار کیا اور کہا کہ ابھی سیریز جاری ہے اس لئے کپتان سے متعلق بات کرنا مناسب نہیں، سیریز کے اختتام پر ہم مجموعی طور پر ٹیم کی کارکردگی کا جائزہ لیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کیلئے ہر ملک سے بات کر رہے ہیں، اے بی ڈیویلیئرز سمیت کئی دیگر غیر ملکی کرکٹرز بھی پاکستان آنے کو تیار ہیں اور مجھے پورا یقین ہے کہ ایک بار جو کھلاڑی پاکستان آئے گا وہ دوبارہ بھی یہاں کھیلنے ضرور آئے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں