Home آج کی خبر پی پی پی کے ایم این اے نوابزادہ افتخار خان کے استعفیٰ کی افواہیں

پی پی پی کے ایم این اے نوابزادہ افتخار خان کے استعفیٰ کی افواہیں

نااہلی سے بچنے کے لیے پی پی پی کے ایم این اے نوابزادہ افتخار خان کی قومی اسمبلی سے مستعفی ہونے اور پی ٹی آئی میں شمولیت کے حوالے سے افواہیں گردش کرتی رہیں۔

تفیصل کے مطابق این اے 184 سے پیپلز پارٹی کے ایم این اے افتخار خان کے خلاف جمشید دستی اور مقامی بینک کے طرف سے ہائیکورٹ ملتان میں نااہلی کے لیے رٹ دائر کی ہوئی ہے جس میں افتخار خان پر الزام ہے کہ ان کے بیٹے نوابزادہ عمران نے مقامی بینک سے 65 لاکھ روپے قرض لیا جو تاحال واپس نہیں لیا گیا جبکہ افتخار خان اپنے بیٹے کے ضامن تھے، ذرائع کے مطابق کیس کی مضبوطی کو دیکھتے ہوئے افتخار خان کی طرف سے اسمبلی رکنیت سے استعفیٰ دینے اور پی ٹی آئی میں شمولیت کے لیے دوستوں سے مشاورت جاری ہے اور جلد استعفیٰ دیئے جانے کا امکان ہے۔
واضح رہے کہ جنرل الیکشن 2018 میں مظفر گڑھ کے حلقہ این اے 184 میں افتخار خان 54778 ووٹ لے کر پی پی پی کے ٹکٹ پر ایم این اے منتخب ہوئے تھے۔ ان کے مدمقابل آزاد امیدوار ملک کریم کسور لنگڑیال 41673 ووٹ لے کر دوسرے جبکہ جمشید دستی 40329 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے۔ اس حلقے میں پی ٹی آئی کی امیدوار سیدہ زہرا باسط بخاری تھیں جو 34929 ووٹ حاصل کرسکی جبکہ ن لیگ کے سید ہارون احمد سلطان صرف 5730 ووٹ حاصل کرسکے۔

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Check Also

بھارتی جا ر حیت پر قو م افوا ج کے شانہ بشانہ ہو گی ،تسنیم قریشی

سرگودھا(سٹاف رپورٹر ) ڈویثرنل صدر ن پیپلزپارٹی تسنیم احمدقریشی نے کہا ہے کہ بھارتی جا ر حی…